204

جموں وکشمیر کے لوگوں کے مفادات سے سمجھوتہ نہیں کریں گے/اپنی پارٹی

اُمید ہے کہ دہلی میں کل جماعتی اجلاس بامقصد سیاسی عمل کیلئے پیش خیمہ ثابت ہوگا


اپنی پارٹی جنرل سیکریٹری رفیع احمد میر نے کہا ہے کہ پارٹی قیادت نے متفقہ طور پر پارٹی صدر سید محمد الطاف بخاری کو اختیار دیا ہے کہ وہ 24جون کو نئی دہلی میں وزیر اعظم کی صدارت میں منعقد ہونے والے کل جماعتی اجلاس میں جموں وکشمیر کے لوگوں کی خواہشات وتوقعات کی ترجمانی کریں۔ اس سے قبل پیر کی شب پارٹی کی ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ منعقد ہوئی جس میں جموں وکشمیر بھر سے پارٹی لیڈران نے حصہ لیا جس میں سماجی واقتصادی امور اور تنظیمی معاملات پر تفصیلی بحث وتمحیص ہوئی۔ایس این ایس کے مطابق میٹنگ میں وزیر اعظم کی طرف سے کی گئی سیاسی پہل کا خیر مقدم کیاگیااور اُمیدظاہر کی گئی کہ 24جون کو منعقد ہونے والی میٹنگ جموں وکشمیر میں سیاسی عمل کی بحالی کے لئے فائیدہ مند ثابت ہوگی اور لوگوں کی دیرینہ بااختیاری کی راہ ہموار ہوگی۔ اجلاس میں 5اگست2019کے بعد جموں وکشمیر میں مجموعی سیاسی صورتحال اور زمینی حالات پر تفصیلی بحث ہوئی اور 24جون کو ہونے والی میٹنگ میں جموں وکشمیر کے سیاسی جذبات کی نمائندگی کرنے پرزور دیاگیا۔ اس دوران جموں وکشمیر کی عوام کو خاص طور سے پانچ اگست 2019کے بعد زندگی کے مختلف شعبہ جات میں درپیش مشکلات کو اُجاگر کیاگیا۔ لیڈرشپ نے اِس بات پرزور دیا کہ جموں وکشمیر کے لوگوں کی مشکلات کا ازالہ کرنے کے لئے حکومت ِ ہند کو ٹھوس اعتماد سازی اقدامات اُٹھانے چاہئے۔ اجلاس میں متفقہ طور فیصلہ کیاگیاکہ اپنی پارٹی جموں وکشمیر کے لوگوں کیلئے چٹان کی طرح کھڑی ہے اور اُن کے سماجی۔ اقتصادی اور سیاسی مفادات کے تحفظ کے لئے ہر فورم پر تمام طرح کے ضروری اقدامات کرے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں